لاول کو غلط فہمی ہے مریم نواز انہیں مستقبل کا لیڈر سمجھتی ہیں، شاہ محمود قریشی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ ن لیگ کی اپنی سوچ اور پیپلزپارٹی کی الگ سوچ ہے اگر بلاول کا خیال ہے کہ مریم آپ کو مستقبل کا لیڈر سمجھتی ہیں تو یہ آپ کی غلط فہمی ہے۔
اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری نے الیکشن کمیشن اور سپریم کورٹ سے مطالبہ کیا ہے کہ عدم اعتماد میں اپنا کردار ادا کریں، میری بلاول سے گزارش ہے کہ یہ قومی اور آئینی ادارے ہیں انہیں سیاست میں نہ گھسیٹیں، قومی اداروں کو سیاست میں قید کرنا ان کے شایان شان نہیں۔
وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ بلاول آرٹیکل 6 کا ذکر کرتے ہیں، ان سے پوچھتا ہوں کہ جب آپ اور آپ کے ابو نوٹوں کے تھیلے لیے ممبران کے دروازوں پر جا کر کہہ رہے ہیں کہ اپنی وفاداریاں تبدیل کریں تو یہ حلف سے روگردانی نہیں، آئین کی روح کو آپ اور آپ کے والد متاثر کر رہے ہیں، ان غیر آئینی ہتھکنڈوں سے باز رہیں، مت بھولیے اس میں ایسے لوگ بھی ہیں جنہوں نے ہمیں آ کر بتایا ہے کہ آپ ان کے ساتھ کیا گفتگو کررہے ہیں، بحیثیت سیاسی کارکن مجھے اور میری جماعت کو اپنے اتحادیوں پر مکمل اعتماد ہے، وہ بہت وضع دار لوگ ہیں انہوں نے ہر مشکل وقت میں ہمارا ساتھ دیا، وہ اپوزیشن کی سب چالوں کو سمجھتے ہیں، اور تجربہ کار سیاستدان ہیں کسی بہکاوے میں نہیں آئیں گے۔
شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آصف زرداری اور بلاول لوگوں کو خریدنے کے لیے رابطے کر رہے ہیں، پاکستان کے باشعور عوام سمجھتے ہیں کہ کہ ان کے “ان بولی الائنس” کا شیرازہ بہت جلد بکھر جائے گا، کیونکہ ان کا کوئی ایک نظریہ اور ایک سوچ نہیں ہے، یہ 30،30 ہزار روپے دے کر لوگوں کو سندھ سے لائے کیا لے کر آئے اور کیا دے کر گئے، کیا بلاول نے پیپلزپارٹی کی آئیڈیالوجی کو مولانا کی آڈیالوجی میں ضم کر دیا ہے، ن لیگ کی اپنی سوچ ہے اگر آپ کا خیال ہے کہ مریم آپ کو مستقبل کا لیڈر سمجھتی ہیں تو یہ آپ کی غلط فہمی ہے، آپ کا نہ نظریہ، نہ قیادت اور نہ منشور ایک ہے، پاکستان کا ہر ذی شعور شہری سمجھ چکا ہے کہ اس بولی الائنس کا مقصد عمران خان کو ہٹانا ہے، لوگ اس بات کی تہہ تک پہنچ چکے ہیں کہ آپ عمران خان سے خوفزدہ کیوں ہیں۔
وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ اس وقت ایک گرد اڑی ہوئی ہے میں اس گرد کے اندر سے دیکھ رہا ہوں کہ لوگ اس عدم اعتماد کے اصل محرکات کو پہچان گئے ہیں، آج بڑی بڑی آفرز کی جا رہی ہیں، کیا جن کو آفر کی جا رہی ہیں وہ آپ کے ماضی سے غافل ہیں، مجھے یقین ہے کہ انشاء اللہ یہ ناکام ہوں گے اور انہیں عنقریب شدید مایوسی ہو گی، عدم اعتماد تحریک کا بھرپور سیاسی جمہوری اور آئینی انداز میں مقابلہ کریں گے، اور انہیں شکست دیں گے

اپنا تبصرہ بھیجیں