چینی صدر کا 2021عالمی انٹرنیٹ کانفرنس ووجن سربراہی اجلاس کو مبارکبادی خط

بیجنگ:چینی صدر شی جِن پھِنگ نے چین کے مشرقی صوبہ ژے جیانگ کے ووجن میں شروع ہونے والی 2021 عالمی انٹرنیٹ کانفرنس ووجن سربراہی اجلاس کو مبارکبادی خط ارسال کیا ہے۔
اپنے خط میں شی نے واضح کیا کہ ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کو تمام شعبوں اور معیشت ، سیاست ، ثقافت ، معاشرے اور ماحولیاتی تہذیب کی تعمیر کے نئے عمل، نئی شکلوں اور نئے ماڈلز میں مکمل طور پر مربوط کیا جا رہا ہے جس کے پیداوار اور بنی نوع انسان کی زندگی پر وسیع اور گہرے اثرات ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ آج کل دنیا میں ایک صدی میں نہ دیکھی جا نے والی گہری تبدیلیاں اور وبا کی صورتحال آپس میں جڑی ہوئی ہے، بین الاقوامی برادری کے لئے ضروری ہے کہ وہ مواصلات اور ڈیجیٹلائزیشن کے ساتھ ساتھ نیٹ ورکنگ اور ذہین ترقی کے رجحانات پر عمل کرتے ہوئے مواقع سے فائدہ اٹھانے اور چیلنجز سے نمٹنے کے لئے ہاتھ ملائے۔

شی نے اس بات پر زور دیا کہ چین دوسرے ممالک کے ساتھ مل کر کام کرنے کے لئے تیار ہے تاکہ ڈیجیٹل معیشت کو متحرک کرنے، ڈیجیٹل حکومت کی کارکردگی کو بڑھانے، ڈیجیٹل سماجی ماحول کو بہتر بنانے، ڈیجیٹل تعاون کا ڈھانچہ قائم کرنے اور ایک مضبوط ڈیجیٹل سکیورٹی ڈھال کی تعمیر میں انسانی ترقی کو فروغ دینے کی تاریخی ذمہ داری نبھائے۔

انہوں نے مزید کہا کہ چین دنیا کے دیگر ممالک کے ساتھ مل کر کام کرنے کیلئے تیارہے تاکہ ڈیجیٹل تہذیب تمام ممالک کے لوگوں کو فائدہ پہنچائے اور انسانیت کے مشترکہ مستقبل والے معاشرے کی تعمیر کو فروغ ملے۔

سربراہی اجلاس اتوار کو”ڈیجیٹل تہذیب کے نئے دور کی طرف-سائبر اسپیس میں مشترکہ مستقبل والے معاشرے کی تعمیر”کے موضوع کے ساتھ شروع ہوا۔ یہ چین کی سائبر اسپیس انتظامیہ اور ژے جیانگ کی صوبائی حکومت نے مشترکہ طور پر منعقد کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں