یوکرائنی صدر کے اعلیٰ معاون قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے

کیف: یوکرائن کے صدر ولادی میر زیلنسکی کے ایک اعلیٰ معاون سیری شیفیر ایک قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے ہیں۔ یوکرائن کی قومی پولیس نے بتایا کہ نامعلوم حملہ آوروں نے ان کی کار کو نشانہ بنایا ہے۔
قومی پولیس کی پریس سروس نے بتایا کہ یوکرائن کے دارالحکومت کیف سے تقریباً 20 کلومیٹر دوری پر واقع گاؤں لیسنیکی کے قریب پیش آنیوالے حملے میں شیفیر محفوظ رہے ہیں لیکن ان کا ڈرائیور زخمی ہوا ہے۔

یوکرائن کے صدارتی دفتر(او پی یو) کے مشیر میخائل پوڈولیاک نے مقامی خبر رساں ایجنسی انٹرفیکس یوکرائن سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ او پی یو کا صدراتی دفتر شیفیر پر حملہ کی کوشش کو زیلنسکی کی اشرافیہ کیخلاف مہم سے جوڑتا ہے۔

صدراتی پریس سروس کے مطابق زیلنسکی جو اس وقت نیویارک میں موجود ہیں انہیں حملے کے بارے میں فوری طور پر آگاہ کر دیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں