فلسطین کی مالی صورتحال مزید خراب ہونے کا خدشہ ہے:وزیرخزانہ

رم اللہ: فلسطینی وزیرخزانہ شکری بشارا نے خبردار کیا ہے کہ اسرائیل کی جانب سے ٹیکس محصولات کے واجبات کی ادائیگی نہ ہونے سے فلسطینی اتھارٹی (پی اے) کی مالی صورتحال مزید خراب ہونے کا امکان ہے۔

بشارا نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ اگر اسرائیل آئندہ ہفتوں میں اپنے پاس موجود رقم جاری نہیں کرتا ہے تو مالی صورتحال مزید پیچیدہ ہو جائے گی، انہوں نے مزید کہا کہ اسرائیل اور کلیئرنگ میکنزم کے ساتھ مالی تعلقات میں اصلاحات کی ضرورت ہے۔

بشارانے ان خیالات کا اظہار رم اللہ میں اپنے دفتر میں یورپی یونین ، ورلڈ بینک ، بین الاقوامی مالیاتی فنڈ اور اقوام متحدہ جیسے ڈونر اداروں کے نمائندوں سے ملاقات کے بعد ایک بیان میں کیا۔

اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان 1994 میں پیرس میں طے پانے والے معاشی معاہدے کے مطابق اسرائیل اتھارٹی کی جانب سے فلسطینی تجارت سے ٹیکس وصول کرکے واپس فلسطینی حکومت کو ادا کرتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں